#CWC19: پاکستانی ٹیم کٹھن امتحان کے لیے کتنی تیار؟

پاکستانی کرکٹ ٹیم کا چار سال قبل ورلڈ کپ کا سفر کوارٹرفائنل میں آسٹریلیا کے خلاف شکست پر ختم ہوا تھا اور وہ ان چار برسوں کے دوران مختلف نشیب و فراز سے گزرتے ہوئے ایک نئے امتحان کا سامنا کرنے کے لیے اب انگلینڈ میں موجود ہے۔

مصباح الحق ون ڈے کے افق سے رخصت ہوئے تھے تو قیادت کی ذمہ داری اظہرعلی کو سونپی گئی تھی لیکن عصرحاضر کے تقاضوں سے ہم آہنگ سمجھنے والے سرفراز احمد کو کپتانی دے دی گئی جو تین برسوں سے اتارچڑھاؤ والی صورتحال کا سامنا کرتے رہے ہیں۔

سرفراز احمد کی قیادت میں پاکستانی ٹیم اگرچہ ٹی ٹوئنٹی کی عالمی رینکنگ میں سب سے اونچا مقام حاصل کرچکی ہے لیکن ون ڈے میں حالات ایک جیسے نہیں رہے۔

پاکستانی کرکٹ ٹیم کا نقطۂ عروج دوسال قبل چیمپینز ٹرافی کی جیت تھی لیکن اس کے بعد کارکردگی میں مستقل مزاجی کے فقدان نے پاکستانی کرکٹ ٹیم کو ون ڈے کی عالمی رینکنگ میں کبھی بھی اس مقام پر نہیں رکھا جسے دیکھ کر دل مطمئن ہوسکے۔

چیمپینز ٹرافی کے بعد سے پاکستانی ٹیم نے 38 ون ڈے انٹرنیشنل کھیلے ہیں جن میں سے اس نےصرف 15 جیتے ہیں 21 میں اسے شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے جبکہ 2 میچز نامکمل رہے۔