انتظار کی گھڑیاں ختم !پنجاب کا وزیر اعلیٰ کون ہوگا؟عمران خان نے سب کو سرپرائز دیدیا،اعلان سن کر ہر کسی کو خوشگوار حیرت

اسلام آباد(این این آئی)پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ پنجاب کے وزیراعلیٰ کیلئے ایک نیا نوجوان لارہا ہوں جو کلین ہوگا اور اس پرکسی قسم کا کوئی سوالیہ نشان نہیں؟ ٗآپ سب نو جوان کو سپورٹ کریں ٗ مشکل الیکشن لڑنے پر سب کو مبارکبا د دیتا ہوں ٗ میرے لئے سب سے بڑا عذاب ٹکٹ دینا تھا ٗ لوگوں وعدہ کیا ہے مدینہ کی ریاست بنائینگے ٗ پارٹی کو ادارہ بنانا ہے ٗ سب سے زیادہ ذمہ داری پنجاب والوں پر ہے ۔ پنجاب پولیس کو غیر سیاسی اور خود مختار بنائیں گے ٗ فیصلے

میرٹ پراور قوم کے مفاد کے لیے کروں گا ۔ بد ھ کو پاکستان تحریک انصاف پنجاب کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس مقامی ہوٹل میں ہوا جس کی صدارت چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے کی ۔ اجلاس میں پنجاب بھر سے نومنتخب اراکین پنجاب اسمبلی سمیت تحریک انصاف میں شامل ہونے والے آزاد امیدوار بھی شریک ہوئے۔ اجلاس میں تحریک انصاف کی مرحوم رہنما سلونی بخاری کو خراج عقیدت پیش کیا گیا۔ذرائع کے مطابق پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں وزیراعلیٰ پنجاب کی تقرری اور کابینہ امور پر مشاورت ہوئی اور وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی شرکا کو پارلیمانی امور سے متعلق آگاہ کیا۔بعد ازاں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہاکہ مشکل الیکشن لڑنے پر سب کو مبارکباد دیتا ہوں، میرے لیے سب سے بڑا عذاب ٹکٹ دینا تھا، ہم نے ٹکٹ دینے کے عمل کو مزید بہتر کرنا ہے اور سب کو پتا تھا کہ اصل پانی پت کی جنگ پنجاب میں لڑی جائے گی جب کہ تمام سروے کہہ رہے تھے خیبرپختونخوا سے تحریک انصاف جیت جائے گی۔انہوں نے کہاکہ کہ دو قسم کی سیاست ہے، ایک وہ ذاتی سیاست جس میں پیسہ بنانے آتے ہیں اور ذاتی سیاست نے سیاستدانوں کو ذلت دی ہے کیوں کہ ذاتی سیاست میں عوام کا نام لیکر اقتدار میں آکراپنی ذات کا سوچتے ہیں۔ دوسری سیاست وہ ہے جو پیغمبروں نے کی ہے اور پیغمبر انسانیت کیلئے کھڑے ہوئے ہیں جب کہ میں لوگوں سے وعدہ کرکے آیا ہوں کہ مدینہ کی ریاست بنانی ہے۔عمران خان نے کہا کہ میں لوگوں سے وعدہ کر کے آیا ہوں کہ مدینہ کی ریاست بنانی ہے، انصاف میرٹ پر کرنا ہے، آپ نے عوام کے پیسے کو اللہ کی امانت سمجھنا ہے اور قوم کا پیسا بچانا ہے تاکہ عوام کی فلاح پر خرچ کیا جاسکے جبکہ ہم نے پارٹی کو ایک ادارہ بنانا ہے۔ سب سے زیادہ ذمے داری پنجاب والوں پر ہے، جہاں ہماری کمزوری ہے اس حلقے میں ابھی سے کام شروع کرنا ہے۔چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ پنجاب کے وزیراعلیٰ کیلئے ایک نیا نوجوان لارہا ہوں، یہ نوجوان کلین ہوگا، اس پرکسی قسم کا کوئی سوالیہ نشان نہیں، آپ سب اس نوجوان کو سپورٹ کریں جب کہ پنجاب میں ہمیں بہت سے چیلنجز کا سامنا ہے، پنجاب کے لوگوں کو ریلیف دینا ہے، وہاں کے لوگ کئی دہائیوں سے مفلسی کی زندگی گزاررہے ہیں۔ عمران خان نے کہا کہ پنجاب پولیس کو غیر سیاسی اور خود مختار بنائیں گے اور کے پی پولیس کے طرز کی اصلاحات لائیں گے، پنجاب کے اسکولوں اور ہسپتالوں کو بہتر سے بہتر بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ میں آپ سے اس کا تقاضا کبھی نہیں کروں گا جس پر میں خود عمل نہ کروں، میں فیصلے میرٹ پراور قوم کے مفاد کے لیے کروں گا جبکہ ذاتی سیاست نے سیاستدانوں کو ذلت دی ہے، ذاتی سیاست میں عوام کا نام لیکراقتدارمیں آکراپنی ذات کا سوچتے ہیں۔